سردی کے موسم میں عورت کوق.رب.ت کی خواہش ق.رب.ت میں دلچسپی نہیں لیتی تو یہ کام کریں

سردی

آجکل مرد حضرات اس بات سے بڑے پریشان ہیں کہ ہماری بیویوں کو ق.رب.ت نہیں آتی جس کیوجہ سے ہم وہ تسکین حاصل نہیں کرپاتے جو نکاح کے بعد اللہ رب العزت ہمارے لیے حلال کی ہے یہ بات یاد رکھیں کہ آجکل سردیوں کا موسم ہے سردیوں کے موسم عورتوں کو بہت زیادہ قر.بت ہواکرتی ہے اللہ رب العزت کا قانون ہے

کہ مرد وعورت کے درمیان ق.رب.ت اللہ پاک نے برابر رکھی ہے جسے نفسانی خواہشات کہا جاتا ہے ۔اس میں کوئی شرم نہیں کیونکہ یہ اللہ تعالیٰ کا دیا ہوا عمل ہے اللہ رب العزت کا بنایا ہوا کام ہے کہ جس سے نسل آگے بڑھتی ہے ۔اگر ہم اس میں شرم کریں گے اس چیز کو دوسروں کے سامنے بیان نہیں کریں گے جو کہ ہمارے مسائل کو حل کرنے والے ہیں علماء ہیں طباء ہیں ڈاکٹر ہیں اگر ہم ان کے سامنے بیان نہیں کریں گے تو یہ بات ہمارے لیے ہلاکت کا باعث ثابت ہوسکتی ہے ۔ وہ مرد حضرات جو اپنی بیویوں کی کم ق.رب.ت پرستی سے پریشان ہیں انہیں چاہیے کہ وہ سردیوں کے موسم میں ایسے ڈرائی فروٹس کا استعمال کریں

جو کہ آپ کے اندر گرمائش کو بڑھا سکتے ہیںاس کا استعمال زیادہ سے زیادہ کریں ۔ویسے بھی کہا جاتا ہے کہ سردیوں میں ق.رب.ت ہوا کرتی ہے اس لیے کہ مچھلی کا استعمال زیادہ ہوتا ہے ڈرائی فروٹس کا استعمال زیادہ ہوتا ہے گرم غذاؤں کا استعمال زیادہ ہوجاتاہے ۔ شادی شدہ مرد حضرات یا عورتیں ہی نہیں بلکہ کنوارے لڑکے اور لڑکیوں کے ساتھ بھی یہ مسئلہ ہوتا ہے ۔کنوارے لڑکے اور لڑکیاں گرم غذائوں کا استعمال کم سے کم کریں کیونکہ اس وقت نفسانی خواہش کو پورا کرنے کیلئے فی الحال کوئی حلال راستہ نہیں ہے ۔ اگر وہ اس طریقے گرم غذاؤں کا استعمال کریں گے

تو یقیناً ان کا دماغ غلط طرف مائل ہوجائیگا ۔جو مرد حضرات بیویوں کی کم قربت سے پریشان انہیں چاہیے

اپنی رائے کا اظہار کریں